معجزہ

ھے اختیار میں تیرے تو معجزہ کر دے
وہ شخص میرا نہیں ھے اسے میرا کر دے

یہ ریگزار کہیں ختم ہی نہیں ہوتا
ذرا سی دور تو راستہ ہرا بھرا کر دے

اکیلی شام بہت جی اداس کرتی ھے
کسی کو بھیج کوئی میرا ھمنوا کر دے

~ از abbascom پر مارچ 7, 2009.

One Response to “معجزہ”

  1. Samina Raja ki aik mojazati nazm

    وہ ستارہ ساز آنکھیں

    وہ ستارہ ساز آنکھیں
    مجھے دور سے جو دیکھیں
    تو مرے بدن میں جاگے
    کسی روشنی کی خواہش
    کسی آرزو کا جادو
    کسی حسن کی تمنا
    کسی عشق کا تقاضا

    مرے بےقرار دل کو
    بڑی خامشی سے چھو لے
    کوئ نرم رو اداسی
    کوئ موج زندگی کی
    کوئ لہر سر خوشی کی
    کوئ خوش گوار جھونکا

    اسی آسماں کے نیچے
    اسی بے کراں خلا میں
    کہیں ایک سرزمیں ہے
    جو تہی رہی نمی سے
    رہی روشنی سے عاری
    رہی دور زندگی سے
    نہیں کوئ اس کا سورج
    نہ کوئ مدار اس کا

    اسی گمشدہ خلا سے
    کسی منزل خبر کو
    کسی نیند کے سفر میں
    کسی خواب مختصر میں
    کبھی یوں ہی بے ارادہ
    کبھی یوں ہی اک نظر میں
    جو کیا کوئ اشارہ
    وہ ستارہ ساز آنکھیں
    مجھے کر گئيں ستارہ

    ~*~

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

 
%d bloggers like this: